Web Analytics
تازہ ترین خبر
ہوم / بلاگ / کارلوس بریتھویٹ کی پی ایس ایل جگہ پر’ آسیب ‘کا ڈیرا

کارلوس بریتھویٹ کی پی ایس ایل جگہ پر’ آسیب ‘کا ڈیرا

کچھ لوگ اپنی ٹیموں کیلئے بہت زیادہ سعد ثابت نہیں ہوتے بلکہ ’’منحوسیت ‘‘کا باعث سمجھے جاتے ہیں، پاکستان سپر لیگ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی نمائندگی کرنے والے ویسٹ انڈین آل راؤنڈر کارلوس بریتھویٹ کا بھی کچھ یسا ہی معاملہ ہے کہ ان کی جگہ کوئی کھلاڑی فرنچائز میں ٹکنے کو ہی تیار نہیں ہے۔

یہ بڑی حیران کن بات ہے کہ عمرے کیلئے روانگی کے سبب انگلش آل راؤنڈر معین علی کا پاکستان سپر لیگ میں کھیلنے کا ارادہ بدل گیاجنہوں نے پہلے تو اس بات پر آمادگی ظاہر کر دی کہ وہ پاکستان سپر لیگ کے دوسرے ایڈیشن میں کوئٹہ کی نمائندگی کریں گے لیکن چوبیس گھنٹے کے اندر انہوں نے اپنے ایجنٹ کی وساطت سے اچانک’’یو ٹرن‘‘لیتے ہوئے کھیلنے سے انکار کر دیا۔

Moin Ali
کارلوس بریتھویٹ کی جگہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کا حصہ بننے والے معین خان نے اگلے ہی دن فیصلہ بدل لیا اور اُن کی جگہ آنے والے بریڈہوج بھی ایک سے زیادہ فیصلے پر قائم نہ رہ سکے

معین علی نے اپنے ایجنٹ کی وساطت سے حتمی تاریخوں کی بابت معلومات حاصل کیں کہ ان کی خدمات کب درکار ہوں گی البتہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے اپنی منصوبہ بندی میں فوری تبدیلی کرتے ہوئے آسٹریلین بیٹسمین بریڈ ہوج کو اسکواڈ میں شامل کر لیا جو پہلے ایڈیشن میں پشاور زلمی کی جانب سے میدان میں اُترے تھے۔

دلچسپ ترین بات یہ ہے کہ ابھی بریڈ ہوج کا نام بھی سامنے آئے ایک ہی دن گزرا تھا کہ آسٹریلین بیٹسمین نے بھی فیملی کی مصروفیات کے باعث ارادہ تبدیل کر دیا اور اب فرنچائز نے بنگلہ دیشی آل راؤنڈر محمود اللہ کا انتخاب کر لیا ہے،دیکھنا یہ ہے کہ کارلوس بریتھویٹ کی خالی جگہ پر کون سا کھلاڑی پاکستان سپر لیگ میں کھیلے گا۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے ترجمان نے ٹوئٹر پر معین علی کو نیک خواہشات کے اظہار کے ساتھ پیغام دیا کہ وہ ایک ٹاپ پلیئر اور اچھے انسان کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں جن کیلئے فیملی کی ذمہ داری اولین ترجیح ہونا چاہئے لیکن یہ بات بھی فراموش نہیں کی جا سکتی کہ یہ پہلا موقع نہیں جب معین علی کو ٹی ٹوئنٹی لیگز کے حوالے سے’’یو ٹرن‘‘ لینا پڑا کیونکہ گزشتہ برس انہوں نے خود کو آئی پی ایل نیلامی کیلئے پیش کیا لیکن جب انگلش کرکٹ حکام نے ان پر کام کے حد سے زیادہ بوجھ کی نشاندہی کی تو چند گھنٹے بعد ہی انہوں نے اپنی عدم دستیابی ظاہر کر دی تھی۔

انگلش کرکٹ ٹیم کی جانب سے خدمات کی انجام دہی کیلئے بھارت میں موجود اہم ترین کھلاڑی معین علی2009ء میں بھی عمرہ کر چکے ہیں جسے انہوں نے انتہائی عمدہ تجربہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ خود کو عمرے کے بعد تازہ محسوس کر رہے تھے جو انسان کو مضبوط اور کرکٹ سے کچھ عرصے تک دور کر دیتا ہے۔

ظاہر سی بات ہے کہ ان کے اس فیصلے پر کوئی انگلی نہیں اٹھا سکتا لیکن معین علی کو یہ بات بھی یاد رکھنا چاہئے کہ وعدے کی پاسداری بھی ایک اہم فریضہ ہے اور انہیں اپنے کیریئر کے بارے میں سوچ سمجھ کر فیصلہ کرنا چاہئے۔

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

معین علی بھی پی ایس ایل2017ء سے باہر

ویسٹ انڈیزکے ٹوئنٹی20کپتان کارلوس بریتھویٹ کی جگہ متبادل کے طورپر کوئٹہ گلیڈی ایٹرزکا حصہ بننے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے